KNN

اہم خبریں

زمین کی خاطر سوتیلے دیور کی بہورابعہ بی بی جان کی دشمن بن گئی،انصاف فراہم کیا جائے،سیدہ غلام فاطمہ

مظفرآباد۔زمین کی خاطر سوتیلے دیور کی بہورابعہ بی بی جان کی دشمن بن گئی،جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہی ہے،گھر کے دروازے توڑکر اندر آکر مارنے کی کوشش کی گئی لوگوں نے جان بچائی،گزشتہ رات ہم نے بڑی مشکل سے جان بچائی،رات ساری نالے میں گزاری ہم برسوں سے کراچی رہ رہے ہیں،جبکہ ہماری ساری زمین ادھر ہے،ہم نے صرف تھانہ پولیس گڑھی دوپٹہ میں درخواست دی کہ ہماری زمین سے درخت کاٹ اعجاز شاہ اور رابعہ بی بی نے فروخت کردئیے ہیں، پولیس موقع پر آئی پھر پولیس واپس چلے گی اُس کے بعد رابعہ بی بی نے ہمیں گھر کے اندر زدکوب کر دیا،وزیراعظم آزادکشمیر،چیف جسٹس آزادکشمیر،چیف سیکرٹری آزادکشمیر،آئی جی پی آزادکشمیر انصاف فراہم کریں،ان خیالات کا اظہار سید ہ غلام فاطمہ زوجہ سید میر حیدر شاہ ساکنہ دچھور میراں تولہ سیداں نے مرکزی ایوان صحافت کے سائلین ڈیسک میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ہماری زمین کا کیس عدالت میں تھا اور دو مرتبہ کیس ہم جیت چکے ہیں پٹواری نے ہمیں دو دن کا ٹائم بھی دیا ہوا ہے کہ ہم آکر آپ کی زمین کی تقسیم کرکے آپ کے حوالے کرینگے،لیکن اس عورت نے ہمارا جینا دوبھر کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہماری زمین میں کائل اور دیگر مختلف اقسام کے درخت تھے جو ان لوگوں نے کاٹ کر کے فروخت کر دئیے ہیں،یہ بہت خطر ناک خاتون ہے یہ خاتون اپنے سسر اور ساس کو بھی مارا کرتی تھی میں خود ایک غریب ہوں میرا خاوند بھی معذور ہے جبکہ میرے بیٹے محنت مزدور ی کرتے ہیں گھر کا نظام بڑی مشکل سے چل رہا ہے،میں اپنی زمین کو دیکھنے اور اُگانے کیلئے کراچی سے یہاں آیا کرتی تھی لیکن ہمیں معلوم نہیں تھا کہ اپنے ہی زمین ہتھیا لیں گے ہماری زمین کو ان لوگوں نے اپنے نام بھی کروایا جس کا ہم نے کیس کیا اور دو مرتبہ یہ کیس ہم جیت چکے ہیں لیکن یہ خاتون کسی کے حکم کو نہیں مانتی ہے۔رابعہ بی بی اور اس کا خاوند اعجاز شاہ دونوں ملازم ہیں اور ہمیں جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں۔میری وزیراعظم آزادکشمیر،چیف جسٹس آزادکشمیر،چیف سیکرٹری آزادکشمیر،آئی جی پی آزادکشمیر،کمشنر مظفرآباد ڈویژن سے اپیل ہے کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جائے اس خاتون کے خلاف کارروائی عمل میں لاتے ہوئے ہمیں جان ومال کا تحفظ فراہم کیا جائے اگرمجھے یا میرے بچوں کو کچھ ہوا اس کی ساری زمہ داری اعجاز شاہ،رابعہ بی بی پر عائد ہوگی۔

Related Articles

Check Also
Close
Back to top button